آب و ہوا میں تبدیلی سے متعلق دنیا کو اپنی پیشرفت جاری رکھنا چاہیے [ویڈیو]: کیری

وزیرخارجہ جان کیری نے مراکش کے شہر مراکیش میں 2016 کی آب و ہوا پر ہونے والی اقوام متحدہ کی کانفرنس  میں کہا ہے کہ ہمیں آب و ہوا میں ہونے والی تبدیلیوں کے خلاف جنگ میں پیشرفت کو ہر صورت میں جاری رکھنا چاہیے۔

آب و ہوا میں آنے والی تبدیلیوں سے متعلق کی جانے والی پیشرفتوں کے حوالے سے اس سال کو تاریخی اہمیت حاصل ہے۔ دسمبر 2015 میں عالمی درجہ حرارت میں اضافے کو محدود کرنے  کے کسی منصوبے پر متفق ہونے کی خاطر تقریباً 200 ممالک  پیرس میں اکٹھے ہوئے تا کہ حدت میں اضافے کو 2 ڈگری سنٹی گریڈ سے کہیں کم سطح پر محدود کیا جا سکے۔ درجنوں ممالک نے سمجھوتے کی توثیق کی جس کے بعد یہ سمجھوتہ نافذ العمل ہو گیا۔ اس کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی برادری نے ہائیڈرو فلورو کاربن کو بتدریج کم کرنے اور بین الاقوامی ہوابازی کو پائیدار پیشرفت کی راہ پر گامزن کرنے پر اتفاق کیا۔

مگر، جیسا کہ کیری اوپر ویڈیو میں کہہ رہے ہیں، " ہم بہت دیر تک یہ انتظار نہیں کرسکتے کہ اُس سائنس کو جس کا ہمیں آج علم ہے ایسی پالیسیوں کی شکل دیں جو اس چیلنج سے نمٹنے کے لیے درکار ہیں۔"

ایک ایسے طوفانی دورے میں جس میں وہ بحرالکاہل کے جزائر پر اور اس کے اردگرد واقع  ممالک سے لے کر انٹارکٹکا، مشرق وسطٰی، افریقہ اور جنوبی امریکہ گئے، کیری نے آب و ہوا کی تبدیلی کے اثرات کا اور عالمی حدت کے لیے تیاری کرنے اور اس کا مقابلے کرنے کی کوششیں کرنے والے لوگوں کا بہت  قریب سے مشاہدہ کیا۔

دنیا کے انتہائی جنوب میں واقع براعظم میں کیری باہر نکلے اور مغربی انٹارٹک کی برفانی چادر پر پیدل چلے۔ اگر یہ پوری برفانی چادر پگھل جائے تو دنیا بھر کے سمندروں میں پانی کی سطح 4 سے 5 میٹر  تک بلند ہوجائے گی۔ کیا ہم اس عمل کو روک سکتے ہیں؟ اس کا جواب ہم پر منحصر ہے۔

کیری نے کہا، " ہر شخص سیاستدانوں کو جوابدہ  بنا کر اور مقامی کمیونٹیوں کی سطح پر کام کر کے تبدیلی لا سکتا ہے۔ میں آپ پر بھروسہ کر رہا ہوں۔"