امریکہ نے کوریا میں اپنا پہلا سفیر 1883ء میں بھیجا تھا۔ 1950ء میں شمالی کوریا کے حملے کے بعد امریکہ نے اقوام متحدہ کے اُس اتحاد کی قیادت کی جس نے جنوبی کوریا کا دفاع کرنے کے لیے جنگ لڑی تھی۔ جنوبی کوریا اور امریکہ نے پہلی مرتبہ 1953ء میں باہمی دفاع کے معاہدے پر دستخط  کیے اور اس وقت سے لے کر آج تک خطے میں سلامتی مہیا کرنے اور عالمی خطرات کے خاتمے کے لیے قریبی طور پر اکٹھے مل کر کام کر رہے ہیں۔

20ویں صدی کے وسط سے لے کر آج تک کی امریکی اور جنوبی کوریا کی سفارتی تاریخ اور تعاون کے ماہ و سال کا ایک مختصر سا احوال پیش کیا جا رہا ہے:

1945

Aerial view of mountain terrain at 38th parallel (© AP Images)
38ویں عرض بلد پر واقع ایک پہاڑی چوٹی پر قائم ایک مورچے کے پاس جنوبی کوریا کے فوجی۔ (© AP Images)

دوسری عالمی جنگ میں جاپان کے ہتھیار ڈالنے کے بعد جزیرہ نمائے کوریا کو 38ویں عرض بلد پر دو مقبوضہ خطوں میں تقسیم کر دیا گیا۔

1948

Douglas MacArthur sitting next to Syngman Rhee (© Charles Gorry/AP Images)
اگست 1948 میں جنوبی کوریا کے صدر سنگمین ری، دائیں اور جاپان میں اتحادیوں کے سپریم کمانڈر جنرل ڈگلس میکارتھر نئی جمہوریہ کے افتتاح کے موقع پر۔ (© Charles Gorry/AP Images)

فریقین کی متحدہ کوریا کی امیدیں پوری نہ ہوئیں اور اس کی بجائے دو علیحدہ ملک تشکیل دیئے گئے: جنوب میں جمہوریہ کوریا اور شمال میں عوامی جمہوریہ کوریا۔

1950

Soldiers walking on an airfield (© Max Desfor/AP Images)
شمالی کوریا کے حملے کے تین مہینے کے بعد ستمبر 1950 میں امریکی میرین فوجیوں نے سیئول کے کمپو کے ہوائی اڈے پر دوبارہ قبضہ کر لیا۔ (© Max Desfor/AP Images)

شمالی کوریا کی افواج نے جمہوریہ کوریا پر حملہ کر دیا۔ امریکہ کی سرکردگی میں اقوام متحدہ کے 16 ممالک پر مشتمل ایک اتحاد نے جنوبی کوریا کا دفاع کیا جبکہ چین شمالی کوریا کی حمایت میں جنگ میں شامل ہو گیا۔

1953

Three men looking at a document (© George Sweers/AP Images)
جنوبی کوریا کی صدر سنگمین ری نے، دائیں، باہمی دفاع کے معاہدے پر دستخط کرنے کے بعد کہا کہ یہ معاہدہ جارحیت کا مقابلہ کرے گا اور دنیا کی سلامتی مضبوط ہوگی۔ (© George Sweers/AP Images)

ایک عارضی صلح بندی سے جنگ کا خاتمہ تو ہو گیا مگر فریقین نے امن کے کسی معاہدے پر دستخط نہ کیے۔ امریکہ اور جمہوریہ کوریا نے باہمی دفاع کے اپنے معاہدے پر دستخط کیے۔

2018-2012

Donald Trump walking with Moon Jae-in at the White House (© Evan Vucci/AP Images)
30 جون 2017 کو صدر ٹرمپ اور جنوبی کوریا کے صدر مون جے اِن وائٹ ہاؤس میں۔ (© Evan Vucci/AP Images)

کوریا اور امریکہ کا پہلا تجارتی معاہدہ 2012 ء میں نافذالعمل ہوا۔ چھ سال بعد صدر ٹرمپ اور صدر مون جے اِن نے آزاد تجارت کے ایک تاریخی اور بہتر معاہدے پر دستخط کیے۔

2017

Donald Trump shaking hands with Moon Jae-in (© Andrew Harnik/AP Images)
7 نومبر 2017 کو صدر ٹرمپ اور جنوبی کوریا کے صدر مون جے ان، سیئول کے بلیو ہاؤس میں ہاتھ ملا تے ہوئے۔ (© Andrew Harnik/AP Images)

صدر ٹرمپ 25 برسوں میں سیئول کا سرکاری دورہ کرنے والے پہلے امریکی صدر بن گئے۔

حالیہ دن

U.S. and South Korean soldiers taking positions (© Lee Jin-man/AP Images)
2015ء میں حقیقی اسلحے کے ساتھ کی جانے والی مشقوں کے دوران امریکہ اور جنوبی کوریا کے فوجی پوزیشنیں سنبھالے ہوئے ہیں۔ (© Lee Jin-man/AP Images)

دو قریبی اتحادی شمالی کوریا کے جوہری خطرے سے نمٹنے اور جزیرہ نمائے کوریا کو جوہری ہتھیاروں سے مکمل طور پر پاک کرنے کی خاطر تعاون کررہے ہیں

.