امریکہ کا ہنڈراس کو زندگی بچانے والے طیارے کا عطیہ

امریکہ کی طرف سے ہنڈراس کی فضائیہ کو خصوصی آلات سے لیس عطیے میں دیے جانے والے تین طیاروں سے زندگیاں بچانے اور منشیات کے غیرقانونی کاروبار کے خاتمے میں مدد ملی ہے۔

امریکہ میں ڈیزائن اور تیار کیے گئے تین سیسنا طیاروں میں سے آخری طیارہ دسمبر 2018 میں ہنڈراس پہنچا۔ اِن طیاروں کو ایسی مشکل کاروائیوں کے لیے بنایا گیا ہے جن میں ممکنہ طور پر تیز ہوائیں، پانی اور دور افتادہ علاقوں میں واقع چھوٹے اور خراب رن ویز پر اترنا شامل ہے۔

ہنڈراس کی فضائیہ کے کمانڈر، جنرل ہوزے لوئیس سوسیڈا نے امریکہ کی جنوبی کمانڈ کے رسالے “ڈیالوگو” کے رپورٹر کو بتایا کہ عطیے کے طور پر دیئے گئے اس طیارے سے منشیات کی سمگلنگ کی روک تھام اور دیگر مجرمانہ سرگرمیوں سے ایسے علاقوں میں نمٹنے میں مدد ملے گی جو اس سے پہلے ہماری پہنچ سے باہر تھے۔

ہنڈراس کی فضائیہ نے 2018 میں منشیات کے سمگروں کے زیرِ استعمال 61 خفیہ رن ویز کو تباہ کیا۔ گزشتہ سال کے مقابلے میں تباہ کی جانے والی رن ویز کی تعداد میں 95 فیصد اضافہ ہوا۔

ہنڈراس کے وزیر دفاع فریڈی سانتیاگو ڈیاز زلاوا نے اخباری نمائندوں کو بتایا، “ہمیں احساس ہے کہ ہمیں منشیات کے سمگلروں کے خلاف جنگ کا سامنا ہے اور ہم اس جرم کا مقابلہ اسی صورت میں کر سکتے ہیں اگر ہم متحد ہوں۔”

زندگیاں بچانا

عطیہ کردہ جہازوں کو ہنڈراس کے دور دراز علاقوں اور جزیروں سے 300 مریضوں اور زخمی افراد کو ہنگامی طبی امداد کے لیے کم از کم وقت میں شہری ہسپتالوں میں پہنچانے کے لیے بھی اِن طیاروں کو استعمال گیا ہے۔

ہنڈراس کی فضائیہ کے پائلٹ اور انسٹرکٹر کیپٹن آسکر جوسیو ایلور ویسکیز نے “ڈیالوگو” کو بتایا، “یہ طیارے ہمارے بہت سارے ہموطنوں کی جانیں بچا رہے ہیں۔”

طبی امداد کے لیے لوگوں کو لانے لے جانے کے علاوہ ہنڈراس کی فضائیہ ان طیاروں کو ہنڈراس اور وسطی امریکہ میں قدرتی آفات کی صورت میں، انسانی بنیادوں پر فراہم کی جانے والی امداد پہنچانے اور دیگر ہنگامی حالات میں بھی استعمال کرے گی۔

اس طیارے کے عطیے کے علاوہ امریکہ نے ہنڈراس، ایلسلویڈور اور گوئٹے مالا میں ادارہ جاتی اصلاحات اور ترقی کے فروغ کے لیے 5.8  ارب ڈالر کی رقم کا وعدہ بھی کیا ہے۔

کل @usembassyhn نے ہنڈراس کی مسلح افواج کو “208 بی گرینڈ کیراوان” قسم کا تیسرا سیسنا طیارہ بطور عطیہ دیا۔ یہ طیارہ#ہنڈراس کے دور دراز علاقوں سے مریضوں کو لانے، طبی سہولتوں کی فراہمی، فوجیوں اور سامان لانے لے جانے میں مدد کرے گا۔

سوسیڈا نے کہا، “اِن طیاروں کے آنے سے ہمارے فضائی بیڑے کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوا ہے اور ان سے ہماری پہنچ میں وہ علاقے بھی آ گئے ہیں جو اس سے  پہلے ہماری فوجی ہوا بازی کی کاروائیوں کی پہنچ سے باہر تھے۔”

وزیر خارجہ پومپیو نے کہا، “اپنے تئیں ہمیں یہ احساس ہے کہ وسطی امریکہ میں اگر ہمارے شراکت کار مزید مضبوط ہوں گے تو اس سے امریکہ بھی مضبوط ہوگا۔”