امریکی ریڈ کراس: ضرورت مندوں کی مدد کرنے والے رضاکار

گزشتہ برس عالمی وبا کی وجہ سے پیش آنے والی مشکلات کے باوجود امریکہ بھر میں امریکی ریڈکراس ضرورت مند لوگوں کی مدد کرنا جاری رکھے ہوئے ہے۔

2020 میں امریکہ کے طول و عرض سے 70,000 نئے رضاکار اس غیرمنفعتی تنظیم میں شامل ہوئے۔

امریکی ریڈ کراس کا انحصار رضاکاریت کے امریکی جذبے پر ہے۔ اس میں کام کرنے والے لگ بھگ 90 فیصد افراد رضاکار ہوتے ہیں اور وہ امریکیوں کی طرف سے عطیے کے طور پر دی جانے والی اشیا تقسیم کرتے ہیں۔ جب کوئی قدرتی آفت آتی ہے تو ریڈ کراس کے رضاکار لوگوں کی عارضی پناہ گاہیں تلاش کرنے میں بھی مدد کرتے ہیں۔

 رضاکار این 95 ماسک تقسیم کر رہے ہیں (© Scott Dalton/American Red Cross)
ریاست اوریگن کے شہر مل سٹی میں امریکی ریڈکراس کے رضاکار، ایرک کارمائیکل جنگل کی آگ کے شہر تک پھیلنے سے متاثر ہونے والے مقامی افراد میں این 95 ماسک تقسیم کرنے کی جگہ پر ایک خاتون کو اس ماسک کے استعمال کا طریقہ بتا رہے ہیں۔ (© Scott Dalton/American Red Cross)

یکم مارچ کو صدر بائیڈن نے ایک اعلان عام میں کہا، “ہمارے ملک کی پوری تاریخ میں بحرانوں کے وقت امریکی عوام کا انسانی جذبہ امید کی ایک روشن کرن کی طرح چمکتا رہا ہے۔ ہم امریکی اسی جذبے کے تحت ریڈکراس کا مہینہ منا رہے ہیں۔ یہ اُن تمام بے لوث امریکیوں کو خراج تحسین پیش کرنے کا ایک موقع ہے جو گھروں سے باہر نکلتے ہیں اور جب کبھی اور جہاں کبھی بھی لوگوں کو مدد کی ضرورت ہو اُن کی مدد کرتے ہیں۔”

 ماسک اور دستانے پہنے ہوئے ایک عورت میز پر اوپر نیچے ڈبے رکھ رہی ہے (© Scott Dalton/American Red Cross)
3 ستمبر 2020 کو نیواورلینز میں امریکی ریڈ کراس کے ساتھ کام کرنے والی ڈیلاس ٹیگ سنائیڈر، پناہ گاہ کے طور پر استعمال کیے جانے والے ایک ہوٹل میں اُن کھانوں کو ترتیب سے رکھ رہی ہیں جنہیں “لورا” نامی سمندری طوفان سے متاثر ہونے والے خاندانوں میں تقسیم کیا جائے گا۔ (© Scott Dalton/American Red Cross)