امریکی سکھوں کی شناخت: تصاویر کے آئینے میں

دو برطانوی فوٹو گرافروں، امیت امین اور نروپ سنگھ  نے زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے 38 امریکی سکھوں کی تصویروں پر مبنی ایک نمائش کا اہتمام کیا۔

حال ہی میں مین ہٹن میں” سکھ پروجیکٹ” کے عنوان سے پیش کی جانے والی نمائش کا اہتما م، نیویارک میں قائم ایک سرگرم  سماجی  گروپ سکھ اتحاد نے کیا تھا۔ اس گروپ کا مقصد امریکی معاشرے کے لیے سکھوں کی خدمات کو اجاگر کرنا تھا۔ امریکہ میں لگ بھگ 5,00,000 سکھ آباد ہیں اور 125 سال سے زیادہ عرصے سے یہاں رہ رہے ہیں۔

اوپر تصویر میں دکھائی گئی کنیٹی کٹ کی اِشپریت کور، دو سال کی عمر میں اپنے خاندان کے ہمراہ امریکہ آئیں۔ انہوں نے بڑے ہو کر نرسنگ کا پیشہ  اختیار کرنے کا فیصلہ کیا کیونکہ ان کے والد پارکنسن کے مرض میں مبتلا تھے۔ 18 برس کی عمر میں  انہوں نے پگڑی یا دستار پہننا شروع کردی۔ (عام طور پر پگڑی سکھ مرد پہنتے ہیں)۔  ان کا کہنا ہے، “میں نے محسوس کیا کہ میں  فخر کے ساتھ اپنا تاج پہننے اور  اپنا مذہب اپنانے کے لیے تیار تھی۔”

 مال جیت سنگھ کلسی

فوجی وردی اور پگڑی پہنے ہوئے ایک فوجی افسر (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)
کمال سنگھ کلسی (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)

کمال سنگھ کلسی  امریکی فوج میں میجر کے عہدے پر فائز ہیں۔ انہوں نے داڑھی رکھی ہوئی ہے اور پگڑی باندھتے ہیں۔ وہ میڈیکل  ڈاکٹر بھی ہیں۔ وہ فوج میں خدمات کی طویل روایت کے حامل ایک بھارتی خاندان میں پیدا ہوئے۔ کلسی (اِشپریت کور کی طرح) ایک بچے کی حیثیت سے امریکہ آئے۔ آج کل وہ نیو جرسی میں رہتے ہیں۔

وہ افغانستان میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔ اس دوران انہوں نے بے شمار جانیں بچائیں۔ جن مریضوں کے زخموں کا انہوں نے علاج کیا انہیں ان کی  پگڑی اور داڑھی سے کوئی سروکار نہیں تھا۔ انہوں نے سکھ اتحاد کو بتایا، ” اگر کوئی چیز کوئی معنی رکھتی تھی تو وہ یہ تھی کہ میں اپنے مشن کے لیے ایک اثاثہ تھا۔”

ہر پریت کور

پگڑی پہنے ہوئے ایک خاتون (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)
ہر پریت کور (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)

ہر پریت کور ریاست میری لینڈ کے ایلی کاٹ سٹی کی ایک فلم ساز ہیں۔ وہ دس سال سے زیادہ عرصے سے سماجی مسائل پر انعام یافتہ دستاویزی فلمیں ڈائریکٹ کرتی چلی آ رہی ہیں۔ برسبیل تذکرہ، ہرپریت کور اور اشپریت کور آپس میں رشتہ دار نہیں ہیں۔

روندر سنگھ بھلہ

بزنس سوٹ اور پگڑی میں ملبوس ایک آدمی کا کلوزاپ (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)
روندر سنگھ بھلہ (© Amit and Naroop/The Sikh Coalition)

سکھ تارکین وطن  کی اولاد، روندر  سنگھ بھلہ نیو جرسی میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے بڑے ہوکر ہوبوکن سٹی کونسل کی ایک نشست کے لیے الیکشن لڑا اور کامیاب ہوئے۔ اس طرح وہ نیو جرسی  کی تاریخ میں منتخب ہونے والے پہلے سکھ عہدے دار بن گئے۔ وہ اس منصب پر آٹھ سال سے خدمات انجام دے رہے ہیں۔

اگر چہ سکھ مذہب امریکہ میں بعض دیگر مذاہب  کی طرح زیادہ معروف نہیں ہے، تاہم امین امیت اور نروپ سنگھ  کے کہنے کے مطابق  سکھ پروجیکٹ  لوگوں کی معلومات میں سکھ مذہب کے فہم کے بارے میں اضافہ کرنے میں مددگار ثابت ہو رہا ہے۔ یہ دونوں اس نمائش میں شامل تصویروں پر مبنی ایک کتاب بھی مرتب کر رہے ہیں۔