بین الاقوامی خلائی سٹیشن پر انسانی موجودگی کے مسلسل 20 سال

ناسا کی خلاباز، کیٹ روبین اور عملے کے اُن کے ساتھی بین الاقوامی خلائی سٹیشن (آئی ایس ایس) پر انسانوں کی بلاتعطل رہائش کی بیسویں سالگرہ 2 نومبر کو منانے جا رہے ہیں۔

آئی ایس ایس پر انسان 2 نومبر 2000 سے موجود ہیں۔ اس کے اولین رہائشی ناسا کے خلاباز اور مہم نمبر ایک کے کمانڈر، ولیم "شیپ” شیپرڈ اور فلائٹ انجنیئر سرگئی کرکالیف اور یوری گڈزینکو تھے۔

تب خلائی سٹیشن کے صرف تین ماڈیول ہوا کرتے تھے۔ اُس میں آج کا تحقیقی کمپلیکس شامل نہیں تھا۔ یہ کمپلیکس پانچ بیڈ روموں والے گھر جتنا بڑا ہے۔ اس میں جِم (ورزش کا کمرہ)، دو غسل خانے اور نیچے زمین پر دیکھنے کے لیے 360 درجے کا منظر دکھانے والی کھڑکی ہے۔

چھ افراد پر مشتمل عملہ اس سٹیشن پر رہتا اور کام کرتا ہے۔ یہ سٹیشن آٹھ کلو میٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے سفر کرتا ہے اور 90 منٹ میں زمین کے گرد چکر لگاتا ہے۔

اس سٹیشن پر 108 مختلف ممالک کی جانب سے 2,700 سے زائد تجربات کیے جا چکے ہیں۔ اِن تجربات میں پلاسٹک کے کچرے کو دوبارہ قابل استعمال بنانے اور کاربن ڈائی آکسائیڈ کی تطہیر جیسی اختراعی ٹکنالوجیوں کو جانچا جا چکا ہے۔ یہ دونوں اقدامات چاند کی سطح پر طویل مدتی مشنوں کے لیے انتہائی اہم ہیں۔

بین الاقوامی خلائی سٹیشن کے بارے میں مزید جانیے (پی ڈی ایف، 6.6 ایم بی)

رات کے وقت آسمان پر آئی ایس ایس کو انسانی آنکھ سے دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کا طریقہ یہ ہے۔