بھارتی وزیراعظم نریندر مودی اور وائٹ ہاؤس کی مشیر ایوانکا ٹرمپ، کاروباری نظامت کاری کی عالمی کانفرنس میں شرکت کرنے آ رہے ہیں۔ (© Money Sharma/AFP/Getty Images)

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے منگل کو عالمی کاروباری نظامت کاری کی کانفرنس کا حیدرآباد میں افتتاح کیا۔ اس موقع پر انہوں نے خواتین کو با اختیار بنانے اور کاروباری منتظمین کی ایک نئی نسل کو متعارف کروانے  کی پرزور اپیل کی۔

امریکی وفد کی سربراہ، وائٹ ہاؤس کی مشیر ایوانکا ٹرمپ نے اس کانفرنس سے خطاب کیا جس میں 1,200 سے زائد کارباری منتظمین اور 300 سرمایہ کار شرکت کر رہے ہیں۔ شرکاء میں خواتین کی اکثریت ہے۔

امریکی اور بھارتی حکومتیں اس تین روزہ کانفرنس کی میزبانی کر رہی ہیں جس میں شرکاء، ورکشاپوں، ماسٹر کلاسوں اور اپنی مصنوعات متعارف کروانے کے مقابلوں میں شرکت کرنے کے علاوہ سرپرستوں اور ممکنہ سرمایہ کاروں سے روابط بھی پیدا کر سکیں گے۔

اس کانفرنس میں جمع سینکڑوں بھارتی کاروباری منتظمین سے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا، “آپ تبدیلی کا ذریعہ  اور انقلاب کے وسائل ہیں۔” انہوں نے اس کانفرنس میں شرکت کرنے والے بیسیوں غیرملکی سرمایہ کاروں کو بھارت میں سرمایہ کاری کرنے کی دعوت بھی دی۔

ایوانکا ٹرمپ نے جو خود بھی ایک سابقہ کاروباری خاتون ہیں، وزیراعظم مودی کی 130 ملین افراد کو غربت سے نکلنے میں مدد کرنے اور تیزی سے ترقی کرنے والی معیشتوں میں سے ایک معیشت کی تعمیر کرنے پر تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ سرمائے اور سرپرستوں تک محدود رسائی سمیت دنیا بھر میں عورتوں کو اپنے کاروبار شروع کرنے میں اب بھی شدید رکاوٹوں کا سامنا  ہے۔

مودی کے سابقہ الفاظ کو دہراتے ہوئے انہوں نے کہا، “انسانیت کی ترقی عورتوں کی با اختیاری کے بغیر نامکمل رہتی ہے۔”