سینیٹ میں توثیق کا نظام کیسے کام کرتا ہے؟

آنے والے ہفتوں میں صدر ٹرمپ کی طرف سے نامزد کردہ وزیر خارجہ، سنٹرل انٹیلیجنس ایجنسی کی ڈائریکٹر اور سابقہ فوجیوں کے امور کے وزیر کو توثیقی سماعتوں کا سامنا کرنا ہوگا۔

صدر جب بھی اپنی انتظامیہ میں کسی عہدے کے لیے کسی کو نامزد کرتے ہیں — ایسا خواہ انتخاب کے فوراً بعد کیا جائے یا اپنی مددتِ صدارت کے دوران کیا جائے — نامزد کردہ فرد کی تقرری کو بہر صورت امریکی سینیٹ کی توثیق چاہیے ہوتی ہے۔

لگ بھگ 1200 اور 1400 کے درمیان سرکاری عہدوں پر تعینات کیے جانے والے افراد کی توثیق ہونا لازمی ہوتی ہے۔ گو کہ بہت سی توثیقی سماعتیں صدر کے عہدہ سنبھالنے سے فوری پہلے اور بعد میں ہو جاتی ہیں، تاہم سینیٹ کے لیے صدر کی پوری مدتِ صدارت کے دوران متبادل تقرریوں کے لیے توثیقی سماعتیں منعقد کرنا ضروری ہوتا ہے۔

اس نظام کا طریقہ کار یہ ہے:

Confirmation_Urdu
(State Dept./Julia Maruszewski)

 

ابتدائی طور پر اس مضمون کی ایک شکل 12 جنوری 2017 کو شائع کی جا چکی ہے۔