ٹرمپ کا حکومت میں نئے کاروباری خیالات متعارف کرانے کا پروگرام

7
صدر ٹرمپ نے حکومت کی کارکردگی کو بہتر بنانے کے دفتر کی سربراہی کے لیے مشیرِ اعلٰی، جیرِڈ کُشنر (دائیں) کا تقرر کیا ہے۔ (© AP Images)

صدر ٹرمپ کا وائٹ ہاؤس میں قائم کردہ امریکی جدت طرازی کا دفتر، کاروباری شعبے سے لیے جانے والے نئے تصورات  کو استعمال کرتے ہوئے حکومتی امور میں بہتری لانے کی کوشش کرے  گا۔

ٹرمپ کے ایک اعلٰی مشیر، جیرِڈ کُشنر جن کی شادی ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا سے ہوئی ہوئی ہے، اس دفتر کی سربراہی کریں گے۔

ٹرمپ نے 27 مارچ کو کہا، "صدارتی انتخاب لڑنے کی بنیادی وجوہات میں سے ایک وجہ نئی سوچ کی ضرورت اور حقیقی تبدیلی تھی اور مجھے علم ہے کہ یہ دفتر اور اس کی ٹیم ہمیں اِن چیلنجوں سے عہدہ برا ہونے میں ہماری مدد کریں گے۔"

اِس کوشش میں کام کرنے والے لوگوں میں قومی اقتصادی کونسل کے ڈائریکٹر، گیری کوہن، اقتصادی پروگراموں کے لیے صدر کی اعلٰی مشیر، ڈینا پاول، اور بین الحکومتی اور ٹکنالوجی کے پروگراموں کے لیے صدر کے معاون، ریڈ کورڈِش شامل ہیں۔

نجی شعبے کے ایک سو سے زائد سی ای او اور دیگر حضرات اس پروگرام کے بارے میں وائٹ ہاؤس  کے اہلکاروں سے پہلے ہی بات چیت  کر چکے ہیں۔

یہ نیا دفتر دیگر امور کے علاوہ مندرجہ ذیل امور پر بھی کام کرے گا:

  • حکومتی خدمات اور انفارمیشن ٹکنالوجی کو جدید بنانا۔
  • بنیادی ڈھانچے کی مکمل تبدیلی کے منصوبے تیار کرنا۔
  • ضابطوں اور طریقہائے کار سے متعلق اصلاحات کو نافذ کرنا۔
  • مصنوعات سازی کے شعبے میں روزگار کے مواقعے پیدا کرنا۔
  • "مستقبل کی افرادی قوت" کے پروگرام ترتیب دینا۔