Secretary of State Mike Pompeo speaking at a lectern (State Dept./Michael Gross)
امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو26 مارچ کو بیان دے رہے ہیں۔ State Dept./Michael Gross)

وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ امریکی ٹیکس دہندگان کے ڈالروں کو اسقاط حمل کی اعانت یا فروغ کے استعمال کیے جانے پر امریکی پابندی کا اطلاق بیرونی ممالک کی غیرسرکاری تنظیموں پر بھی ہوتا ہے۔

“میکسیکو سٹی پالیسی” کا اعلان آنجہانی صدر ریگن نے کیا تھا اور 2017ء میں صدر ٹرمپ نے اس کے دائرہ کار کو وسعت دی تھی۔ چونکہ اِس کا اعلان صدر ریگن نے میکسیکو سٹی میں کیا تھا اسی لیے اسے یہ نام دیا گیا تھا۔

26 مارچ کو وزیر خارجہ پومپیو نے امریکی براعظموں کی ریاستوں کی تنظیم [او اے ایس] کے ایک ادارے کی جانب سے اسقاط حمل سے متعلقہ کی جانے والی حمایت کے نتیجے میں پیدا ہونے والے خدشات کی نشاندہی کی۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ او اے ایس کو اپنے حصے کی رقم اندازاً اُسی تناسب سے کم کر دے گا جتنا کہ اس طرح کے کاموں پر او اے ایس کے ممکنہ اخراجات میں امریکہ کا حصہ بنے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے محکمہ خارجہ کو ہدایت کی ہے کہ غیر ملکی امداد کے سمجھوتوں میں ایک ایسی شق شامل کی جائے جس میں اسقاط عمل سے متعلقہ حمایت کی واضح الفاظ میں ممناعت ہو۔

پومپیو نے بتایا کہ امریکہ کے [سمجھوتوں کا] نفاذ کرنے والے زیادہ تر شراکت کار “میکسیکو سٹی پالیسی”  پر عمل درآمد کرنے پر رضامند ہیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ امریکہ ایسی غیر سرکاری تنظیموں کو صحت کے شعبے کے لیے دی جانے والی امداد سے انکار کر دے گا جو اسقاط حمل کرنے اور اسقاط حمل کے فروغ کے لیے بیرونی ممالک میں کام کرنے والے گروپوں کو مالی امداد فراہم کرتی ہیں۔ پومپیو نے کہا، “ہم چوری چھپے مالی امداد فراہم کرنے کی سکیموں اور ہماری پالیسی سے بچنے کے تمام طریقوں کو ختم کرنے کی اپنی پالیسی کو نافذ کریں گے۔ امریکی ٹیکس دہندگان کا پیسہ اسقاط حمل کو یقینی بنانے پر نہیں خرچ ہوگا۔”

پومپیو نے کہا، “ہماری انتظامیہ نے یہ ثابت کیا ہے کہ ہم عورتوں کو صحت کی سہولتیں فراہم کرنے سمیت صحت کے اپنے مقاصد حاصل کر سکتے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ ہم ایسے بچوں کو ہلاک کرنے سے انکار بھی کر سکتے ہیں جو ابھی پیدا نہیں ہوئے۔”

انہوں نے کہا کہ نئی شق کا یہ مطلب ہوگا کہ ہر سال نو ارب ڈالر کی وہ غیر ملکی امداد جو امریکہ صحت کے عالمی پروگراموں کے لیے دیتا ہے اُس سے “پہلے کی نسبت اور زیادہ اُن بچوں کی حفاظت کی جا سکے گی جو ابھی پیدا نہیں ہوئے۔”

پومپیو نے کہا، “یہ ایک باوقار کام ہے۔ یہ درست کام ہے۔ مجھے ایک ایسی انتظامیہ میں کام کرنے پر فخر ہے جو ہم میں سے سب سے زیادہ کمزوروں کا دفاع کرتی ہے۔”