یومِ بسٹیل کی دوستی کی ایک علامت

تصویری مجموعہ جس میں مارکی ڈی لیفی ئیٹ کی مصور کی بنائی ہوئی تصویر(courtesy of Museums at Washington and Lee University) اور جارج واشنگٹن کی مصور کی بنائی ہوئی تصویر اور شیشے کے ڈبے میں بند چابی (Mount Vernon Ladies’ Association)
درمیان میں: بیسٹیل جیل کی چابی جارج واشنگٹن کے ماؤنٹ ورنن والے گھر کے مرکزی ہال میں لٹک رہی ہے۔ بائیں طرف: مارکی ڈی لیفی ئیٹ کی 1779ء کی مصور کی بنائی ہوئی تصویر۔ دائیں طرف: جارج واشنگٹن کی 1783ء کی مصور کی بنائی ہوئی تصویر۔ (بائیں تصویر:Courtesy of Museums at Washington and Lee University دائیں تصویر: Mount Vernon Ladies’ Association )

14 جولائی کا یوم بیسٹیل 1789ء میں فرانسیسی انقلاب کے آغاز کے اُس دن کی یاد مناتا ہے جب فرانسیسی عوام نے پیرس کی ایک جیل، بسٹیل پر دھاوا بولا۔ یہ جیل بربن شاہی خاندان کی نا انصافیوں کی علامت تھی۔

اس کے فورا بعد فرانسیسی عوام نے فرانس کی نئی حاصل کردہ آزادی کی حفاظت مارکی ڈی لیفی ئیٹ کو سونپتے ہوئے بیسٹیل کی چابی اُن کے حوالے کی۔ یہ خیرسگالی کی ایک علامت تھی۔ یہ وہی مارکی ڈی لیفی ئیٹ ہیں جنہوں نے امریکہ کو برطانیہ سے آزادی حاصل کرنے میں مدد کی تھی۔

لیفی ئیٹ جارج واشنگٹن کے ایک اچھے دوست تھے۔ انہوں نے دونوں ممالک میں دوستی کو مضبوط بنانے کے لیے 1790ء میں فرانسیسی عوام کی جانب سے یہ چابی واشنگٹن کو بھجوا دی۔

آج بھی یہ چابی واشنگٹن کے ورجنیا کے ماؤنٹ ورنن والے گھر میں لٹک رہی ہے جہاں آنے والے اسے دوستی، آزادی اور جمہوریت کی علامت کے طور پر دیکھ سکتے ہیں۔