صدارتی کابینہ کا مختصر تعارف [وڈیو]

صدر ٹرمپ کی کابینہ کم و بیش تشکیل پا چکی ہے۔ اس اہم گروپ میں شامل کون کون سی خواتین و حضرات ہیں اور وہ کیا کرتے ہیں؟
مشیل اور بارک اوباما ہوائی جہاز کے دروازے سے ہاتھ ہلاتے ہوئے۔ (© AP Images)

اوباما گھرانے کا آئندہ کیا پروگرام ہے؟

اپنی صدارتی مدت مکمل کرنے کے بعد، صدور عام طور سے اپنے آبائی شہروں کو لوٹ جاتے ہیں۔ اوباما کا گھرانہ ایسا نہیں کرے گا۔ دیکھیے اس زبردست جوڑے کا کیا پروگرام ہے۔
نکی ہیلی سٹیج پر تقریر کرتے ہوئے (© AP Images)

اقوام متحدہ میں امریکہ کی نئی سفیر: جنوبی ایشیائی تارکین وطن...

ساوًتھ کیرولائنا کی سابق گوررنر، نکی ہیلی اقوام متحدہ میں نئی امریکی سفیر کی حیثیت سے خدمات سر انجام دیں گی۔

میں اس ملک کے بارے میں زیادہ پُرامید ہوتے ہوئے ...

قوم سے اپنے الوداعی خطاب میں اوباما نے کہا ہے کہ گزشتہ آٹھ سال میں ان کا امریکہ پر ایمان مضبوط ہوا ہے۔

ٹرمپ کی کابینہ کے لیے نامزد کردہ حالیہ ترین افراد کی...

نومنتخب صدر ٹرمپ نے معاشی قیادت اوراندرون و بیرونِ ملک امریکی کاروباروں کے فروغ کی خاطر اپنی کابینہ کے لیے نامزد کیے جانے والے افراد کا اعلان کیا ہے۔
ہجوم سےنکل کر جاتے ہوئے ایک ایسے شخص کا خاکہ جس کے پیروں تلے امریکہ کی مہرِ صدارت ہے۔ (State Dept./Doug Thompson)

جب صدر تبدیل ہوتے ہیں، تو یہ لوگ اپنی جگہ برقرار...

امریکہ میں نئے صدر کا انتخاب اپنے ساتھ نئے تصورات اور نئے لوگوں کو واشنگٹن میں لے کر آتا ہے۔ مگر پیشہ ور وفاقی ملازمین کسی خلل کے بغیر بدستور کا م کرتے رہتے ہیں۔
ایک جمنازیم میں قائم کیے گئے ووٹروں کے بُوتھ ۔ (© AP Images)

کیا ووٹ ڈالنے کے لیے شناختی کاغذات ضروری ہیں؟ امریکہ میں...

جب 8 نومبر کے انتخابات میں امریکی ووٹر ووٹ ڈالنے جائیں گے تو وہ جمہوریت پر اپنے اعتماد کا اظہار کریں گے اور ممکن ہے انہیں اپنا کوئی نہ کوئی شناخت نامہ بھی دکھانا پڑے۔

نیشنل پارک سروس کی سوویں سالگرہ پر ریاست مین میں، ایک...

نیشنل پارک سروس کو اپنی سوویں سالگرہ کے موقع پر عطیہ دینے والے ایک نجی خاندان کی طرف سے، 35,000 ہیکٹر زمی تحفے میں ملی ہے۔
اوباما اور خاتونِ اول، اور منموہن سنگھ اور ان کی اہلیہ وائٹ ہاؤس میں۔ (© AP Images)

مہمانوں کی پُر مسرت رفاقت: اوباما اور ان کی اہلیہ کے...

صدراوباما نے غیرملکی لیڈروں کے لیے 17 سرکاری ڈنر منعقد کیے ہیں۔ ان پُرتکلف تقریبات کے ذریعے صدر اور خاتونِ اول کے لیے سفارت کاری اور شان و شوکت کو یکجا کرنا ممکن ہوجاتا ہے۔