جنگلی حیات

ایک جہاز آگ پر سرخ رنگ کا مواد گرا رہا ہے۔ (© Noah Berger/AP Images)

آسٹریلیا میں آگ پر قابو پانے میں مدد کے لیے امریکہ...

امریکہ آگ بجھانے والاعملے کے ساتھ ساتھ جنگلوں میں لگی آگ بجھانے کے ماہرین بھی آسٹریلیا روانہ کر رہا ہے تاکہ وہ جنگلوں میں پھیلی اس آگ پر قابو پانے میں آسٹریلیا کی مدد کر سکیں جس نے ہزاروں ایکڑ زمین کو جلا کر راکھ کر دیا ہے۔
Elephants in the wild (© Ana Verahrami/Cornell University)

ہاتھیوں کی حفاظت کا ایک نیا طریقہ

جانیے کہ کیسے کورنیل یونیورسٹی کے ماہرین حیاتیات افریقی ہاتھیوں کو غیرقانونی شکار سے بچانے کے لیے ان کی نشاندہی اور حفاظت کی غرض سے نئی ٹیکنالوجی سے کام لے رہے ہیں۔

زوہیکاتھان کے ذریعے جنگلی جانوروں کا تحفظ

امریکی دفتر خارجہ کی معاونت سے دوسری سالانہ زوہیکاتھان کے موقع پر تیار کردہ نئی ایپلی کیشنز کی بدولت خطرات سے دوچار جانوروں کو کسی قدر تحفظ مل سکتا ہے۔
خم دار سینگوں والے ہرن چاڈ میں۔ (© Environment Agency–Abu Dhabi)

ایک نایاب ہرن کی افریقہ واپسی

جنگلی حیات، ماحولیات

چیتوں کی نسل میں اضافہ: امریکہ میں ایک ہفتے میں 10...

سمتھ سونین انسٹی ٹیوشن کے ایک تحقیقی ادارے میں صرف ایک ہفتے کے دوران چیتوں کے 10 بچے پیدا ہوئے۔
سیاہ اور سفید کتا پہاڑی چرا گاہ میں بڑے سینگوں والی بھیڑوں کی نگرانی کر رہا ہے۔ (NPS/A.W. Biel)

بارک رینجرز: جانوروں اور لوگوں کی حفاظت کرنے میں پارک رینجروں...

'بارڈر قلی' نسل کی گریسی نامی کتیا، گلیشئیر نیشنل پارک میں پائی جانے والی جنگلی حیات کو سیاحوں سے محفوظ رکھنے کی خصوصی مہارت رکھتی ہے۔
مونگوں کی تین اقسام (Courtesy of Antonio Rodríguez Canto)

آپ نے ایسے مونگے پہلے کبھی نہیں دیکھے ہوں گے...

ہم اکثر بھول جاتے ہیں کہ مونگے، زندہ، سانس لینے والے اور حرکت کرنے والے جاندار ہیں۔ حرکت کرتے ہوئے مونگوں کی یہ ویڈیود یکھیے اور جانیے کہ آپ کس طرح ان کی حفاظت کرسکتے ہیں ۔
پنگولین کے بچے کو بوتل سے دودھ پلایا جا رہا ہے (© AP Images)

اس’ چلتے پھرتے آرٹی چوک‘ اور جنگلی حیات کی مدد کیجیے

پنگولین کو 2016ء کی CITES کانفرنس میں خلاف قانون تجارت سے سب سے زیادہ تحفظ فراہم کیا گیا ہے۔ حکومتوں نے ہاتھیوں، شارک مچھلیوں اوردوسرے جانداروں کے تحفظ کے لیے بھی کثرت رائے سے فیصلے کیے۔
چیتے کے بچے قالین پر اٹکھیلیاں کرتے ہوئے۔ (© AP Images)

زوہیکاتھون کے ذریعے جنگلی حیات کی غیر قانونی تجارت کے خلاف...

سڈنی سے لے کر سی ایٹل اور لندن تک ٹیموں کے پاس 48 گھنٹے تھے۔ اس عرصے میں انہیں اپنے لیپ ٹاپ کھولنے تھے اور دنیا کے اولین زوہیکاتھون میں جنگلی حیات کی غیرقانونی تجارت پر قابو پانے کے طریقے معلوم کرنا تھے۔