دہشت گردی

video

مذہبی زیادتیوں کے چہرے: رفیدہ بونیا احمد [وڈیو]

2015 میں ڈھاکہ، بنگلہ دیش میں اسلامی جنجگوؤں نے مصنفہ رفیدہ بونیا احمد پر حملہ کیا۔ انہوں نے مختلف مذاہب کے ماننے والوں کے مابین باہمی احترام کی بات کی ہے۔
مسکراتے ہوئے بچے کو پیار کرتی ہوئی عورت کے پاس لوگ کھڑے ہیں۔ (© Philip Issa/AP Images)

امریکہ داعش کے خلاف جنگ کی قیادت کرنا جاری رکھے گا:...

امریکہ اس علامی اتحاد کی قیادت کرنا جاری رکھے گا جس نے داعش کے خلاف کامیابیاں حاصل کیں ہیں۔ اس کے سات ساتھ امریکہ دہشت گروہ کے دوبارہ ابھرنے کو روکنے پر بھی کام کر رہا ہے۔

داعش کو شکست دینے والے عالمی اتحاد کا آئندہ لائحہ عمل...

داعش کو شکست دینے کے بعد انسداد دہشت گردی کی کوششوں کو جاری رکھنے کے لیے 14 نومبر کو بین الاقوامی شراکت کار واشنگٹن میں اکٹھے ہو رہے ہیں۔
ڈائس پر کھڑا ایک آدمی تقریر کر رہا ہے۔ (Dominic Aquilina/MFSA)

مالیاتی جرائم کے خاتمے کے لیے امریکہ اور مالٹا کی شراکت...

منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی امداد کے خلاف تحفظ فراہم کرنے کی خاطر مالٹا میں امریکی سفارت خانہ اور مالٹا کی حکومت مالی قوانین کو مضبوط بنا رہے ہیں۔

ايرانی عوام مصائب کا شکار، جبکہ حکومت دہشت گردی کی مالی...

ايرانی حکومت بيرونی ممالک ميں دہشت گردی کی اعانت کے ليے اربوں ڈالرز خرچ کرتی ہے جبکہ ايرانی عوام کمزورمعيشت کا سامنا کرنے پر مجبور ہيں اور عام اشياء خوردونوش کے حصول کے ليے بھی تگ ودو کر رہے ہيں۔

امریکی پابندیوں کے بوجھ تلے رینگتی ہوئی ایرانی معیشت

ایران کے خلاف امریکہ کی زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی مہم کے نتیجے میں تیل کی برآمدات کم ہو چکی ہیں اور افراط زر کی شرح آسمان کو چھو رہی ہے۔
Elizabeth Slater (© Mandel Ngan/AFP/Getty Images)

محکمہ خارجہ کی جانب سے امریکی سفارت کاری کی پہلی ہیروئن...

فارن سروس سپیشلسٹ، ایلزبتھ "لزی" سلیٹر سے ملیے۔ وہ سفارت کاری کے خاصے یعنی دلیری اور مل جل کر کام کرنے کی خصوصیت کی جیتی جاگتی تصویر ہیں۔
(© Mandel Ngan/AFP/Getty Images)

دہشت گرد نیٹ ورکوں پر امریکہ کی سخت ہوتی ہوئی گرفت

ٹرمپ انتظامیہ دہشت گردوں کے نیٹ ورکوں اور دنیا بھر میں اُن کی مالی معاونت کرنے والوں کو ہدف بنانے کے لیے امریکی اختیارات کو مزید مضبوط بنا رہی ہے۔
(State Dept./Michael Gross)

ایران کے دہشت گردی کے نیٹ ورک کی اطلاع پر...

ایرانی رہنماؤں پر دباؤ بڑہاتے ہوئے، امریکہ نے ایسی معلومات کی فراہمی پر ڈیڑھ کروڑ ڈالر کے انعامات کا اعلان کیا ہے جن کے نتیجے میں دہشت گردوں کے مالی مدد کے نظام کو درہم برہم کیا جا سکے۔